’مودی نے ایکشن کیا تو جواب دیں گے‘

پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ وہ نریندر مودی کو پیغام دینا چاہتے ہیں کہ ’آپ ایکشن لیں ہم اینٹ کا جواب پتھر سے دیں گے۔‘

یوم آزادی کے موقع پر پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں قانون ساز اسمبلی سے اپنے خطاب میں انھوں نے کہا کہ انڈیا کشمیر میں ہونے والے مظالم سے توجہ ہٹانے کے لیے پاکستان کے زیرِ انتظام کشمیر میں ’ایکشن‘ کر سکتا ہے۔

وزیرِاعظم نے کہا کہ پاکستان اقوامِ متحدہ کے سامنے مسئلہ کشمیر اٹھا رہا ہے اور اب یہ اقوامِ متحدہ پر ہے کہ وہ کشمیر سے متعلق قراردادوں پر کیسے عمل کرواتا ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ مودی کو یہ کارڈ کھیلنا بہت مہنگا پڑے گا، اب دنیا کی نظر کشمیر پر ہے۔

انھوں نے کہا کہ ’نریندر مودی کسی غلط فہمی میں نہ رہیں کہ آپ کشمیر پر قانون پاس کر کے کشمیریوں کو غلام بنا لیں گے۔‘

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ’نریندر مودی جو آپ کریں گے تو ہم مقابلے کے لیے آخر تک جائیں گے۔`

انھوں نے کہا کہ ’آر ایس ایس (راشٹریہ سیوک سنگ) نے جرمنی کی نازی پارٹی سے سیکھا ہے کہ اگر تھوڑے لوگ منظم ہو جائیں تو پوری قوم پر غالب آ سکتے ہیں۔ بی جے پی نے انڈیا میں یہی کیا ہے۔‘

وزیرِ اعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان پورح طرح تیار ہے، فوج اور قوم ایک پیچ پر ہیں۔

عمران خان نے اقوامِ متحدہ کو پیغام دیتے ہوئے کہا کہ ’کشمیری آپ کی طرف دیکھ رہے ہیں۔‘

انھوں نے کہا کہ پاکستان کشمیر کے مسئلے کو لے کر دنیا کے ہر فورم پر جائے گا۔ ‘ہم عالمی عدالتِ انصاف میں جائیں گے۔ میں کشمیر کا سفیر بنوں گا۔’

دوسری جانب پاکستانی فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور نے فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کا بیان ٹویٹ کیا ہے جس میں انھوں نے کہا ہے کہ ’ہم نتائج کی پرواہ کیے بغیر ظلم کے سامنے کھڑے ہوں گے۔‘

انھوں نے کہا ہے کہ ’پاکستانی فوج کشمیر کاز میں اپنا کردار ادا کرنے کے لیے پوری طرح تیار ہے۔‘

یاد رہے کہ انڈین حکومت کی جانب سے کشمیر کی مخصوص آئینی حیثیت کے خاتمے کے بعد کشمیر میں گذشتہ دس روز سے لاک ڈاؤن جاری ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close