کشمیر، سلامتی کونسل کا اجلاس طلب

پاکستان نے کہا ہے کہ اس کی درخواست پر اقوام متحدہ نے کشمیر کے صورتحال پر سلامتی کونسل کا اجلاس جمعہ کو دس بجے طلب کیا ہے۔

پاکستان ٹیلی ویژن کے مطابق کہ پاکستان کی درخواست پر سلامتی کونسل کی جانب سے اجلاس بلایا جانا بہت بڑی کامیابی ہے۔

یاد رہے کہ آخری مرتبہ 1998 میں سلامتی کونسل کی قرار داد میں مسئلہ کشمیر کا ذکر ہوا تھا۔

پاکستان کے سرکاری ٹی وی کے ساتھ انٹرویو میں پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ مسئلہ کشمیر دہائیوں بعد سلامتی کونسل کے ایجنڈے پر بحث کے لیے لایا جارہا ہے۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پاکستان کو سفارتی محاذ پر بہت بڑی کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ 

انہوں نے کہا کہ انڈیا سلامتی کونسل کے اجلاس کی مخالفت کر رہا ہے۔

دوسری جانب چین نے انڈیا کے زیر انتظام کشمیر کی تازہ ترین صورتحال پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں پاکستان کے درخواست کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر کے مسئلے پر اجلاس جمعرات یا جمعہ کو بلایا جائے۔

عالمی خبر رساں اداروں کے مطابق غیر ملکی سفیروں نے کہا ہے کہ فرانس نے اس درخواست کا جواب دیتے ہوئے تجویز پیش کی ہے کہ کونسل اس معاملے پر کسی باقاعدہ اجلاس کے غیر رسمی انداز میں پرتبادلہ خیال کرے۔

یاد رہے پانچ اگست کو انڈیا کی حکومت نے کشمیر کی خصوصی حیثیت کو ختم کیا تھا۔

پاکستان نے انڈین حکومت کے اس فیصلے کی مذمت کی تھی اور کہا تھا کہ انڈیا کا یہ اقدام نہ صرف غیر قانونی ہے بلکہ یہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے خلاف ہے۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل اینٹونیو گٹیرس نے ایک بیان میں پاکستان اور انڈیا سے مطالبہ کیا ہے ایسے کسی بھی اقدام سے گریز کریں جس سے کشمیر کی خصوصی حیثیت متاثر ہو۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close