توسیع کا نوٹی فیکیشن غلط ہے؟

عظمت گل ۔ صحافی / پشاور

پاکستان کی فوج کے سربراہ کی مدت ملازمت میں تین سالہ توسیع کے خلاف پشاور ہائیکورٹ میں دائر کی گئی درخواست واپس لے لی گئی ہے۔

درخواست کی سماعت چیف جسٹس پشاور وقار احمد سیٹھ اور جسٹس محمد نعیم نے کی۔

چیف جسٹس نے درخواست واپس لینے کی استدعا پر وکیل سے پوچھا کہ ”کیا ہوا، ڈر گئے ہیں؟۔

خیال رہے کہ وکیل میاں عزیز الدین کاکاخیل نے آرمی چیف کی توسیع کو چیلنج کیا تھا۔

دلچسپ امر یہ ہے کہ اٹارنی جنرل انور منصور بھی اسلام آباد سے پشاور پہنچے اور عدالت میں پیش ہوئے ہرچند کہ یہ پہلی سماعت تھی اور ان کو ابھی نوٹس بھی جاری نہیں کیا گیا تھا۔

پشاور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس نے کہا کہ پہلی مرتبہ اٹارنی جنرل آئے ہیں، ہمارے ہاں ٹاپ کی فنکشریز کے خلاف کیسز ہیں۔

اٹارنی جنرل نے کہا کہ فیس بک سے نوٹیفکیشن اٹھا کر رٹ دائر کی گئی۔ عدالت میں غلط نوٹیفکیشن لایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ پٹیشنر نے رٹ پٹیشن بھی واپس لے لی ہے۔

پشاور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس نے کیس نمٹانے کا حکم سنایا تاہم ابھی تحریری فیصلہ جاری نہیں ہوا۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close