بیورو کریٹ کا جسٹس قاضی فائز کو جواب

پاکستان کی سپریم کورٹ کے رجسٹرار اور بیورو کریٹ ارباب عارف نے بطور سیکریٹری سپریم جوڈیشل کونسل خود پر لگائے گئے الزامات کا جواب دیا ہے۔

جسٹس قاضی فائز عیسی کیخلاف صدارتی ریفرنس میں سیکرٹری سپریم جوڈیشل کونسل نے عدالت عظمی میں ایک صفحے پر مشتمل جواب جمع کرایا ہے۔

سیکرٹری جوڈیشل کونسل نے خود پر جسٹس قاضی فائز کے لگائے تمام الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ کونسل میں صدارتی ریفرنس پر کارروائی کے دوران غیر قانونی، بے قاعدگی یا تعصب کا مظاہرہ نہیں کیا۔

ارباب عارف نے موقف اختیار کیا ہے کہ کونسل میں کارروائی کے دوران بدنیتی، غیر مساوی سلوک یا دہرے معیار کا مظاہرہ بھی نہیں کیا۔

”جوڈیشل کونسل میں کارروائی کے دوران نہ اپنے اختیارات سے تجاوز کیا اور نہ ہی جسٹس قاضی فائز کے آئینی حقوق سلب کرنے کیلئے حکومت کا ساتھ دیا۔“

انہوں نے لکھا ہے کہ سپریم کورٹ کے تمام جج صاحبان قابل احترام ہیں۔ اعلیٰ عدلیہ کے جج صاحبان کے احترام میں رائی برابر کوتاہی کا نہ سوچا جاسکتا ہے اور نہ ہی تصور کیا جاسکتا ہے۔

ارباب عارف کی جواب میں کہا گیا ہے کہ امور کی انجام دہی ایمانداری اور نیک نیتی کیساتھ کی۔

سپریم کورٹ کا دس رکنی بنچ کل جسٹس قاضی فائز عیسی کی درخواست پر سماعت کرے گا۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close