ووٹ کو عزت دو پر ڈٹے ہو ئے ہیں، نواز شریف

پاکستان کے سابق وزیراعظم نواز شریف نے جمعیت علمائے اسلام کے آزادی مارچ اور دھرنے کی حمایت کی ہے اور کہا ہے کہ وہ ووٹ کو عزت دو پر ڈٹے ہوئے ہیں۔

جمعے کو لاہور کی احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر نواز شریف نے راہداری میں صحافیوں کے سوالوں کے جواب دیتے ہوئے کہا کہ وہ آزادی مارچ کے حوالے سے فضل الرحمان کو سراہتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ الیکشن کے فوری بعد مولانا فضل الرحمان نے حلف نہ لینے اور پر اسمبلیوں سے استعفے دینے کی بات کی تھی تاہم ان سے کہا تھا کہ پہلے موقع دینا چاہیے۔ ’اب سمجھتے ہیں کہ ان کے مؤقف میں وزن تھا اور اب بھی ان کا مؤقف درست ہے۔ ہم مولانا فضل الرحمان کے جذبے کو سراہتے ہیں۔‘

نواز شریف نے صحافی فہد شہباز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ کل بھی ووٹ کو عزت دو پر ڈٹے ہوئے تھے اور آج بھی اس بات پر ڈٹے ہوئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ اپنے ملک کے لوگوں اور ان کی رائے کو عزت دیں گے تو دنیا بھی عزت کرے گی۔

پاکستان کے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو چودھری شوگر ملز کیس میں ملزم نامزد کیے جانے کے بعد لاہور کی احتساب عدالت میں پیش کیا گیا جہاں نیب نے ان کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی جس کو منطور کرتے ہوئے 14 دن کا جسمانی ریمانڈ دیا گیا۔

نواز شریف کو کوٹ لکھپت جیل سے احتساب عدالت لاہور لایا گیا۔

اس موقع پر سخت سیکورٹی انتظامات کے باجود سینکڑوں ن لیگی کارکن سڑکوں پر نکلے اور گو نیازی گو کے نعرے لگاتے رہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close