نواز شریف کی عبوری ضمانت منظور

پاکستان کے سابق وزیراعظم نواز شریف کی سزا معطلی اور طبی بنیادوں پر ضمانت کے لیے دائر درخواست کی اسلام آباد ہائی کورٹ میں ’ایمرجنسی سماعت‘ کے بعد منگل تک عبوری ضمانت منظور کر لی گئی ہے۔

ہائیکورٹ نے کہا ہے کہ وزیراعظم، وزیراعلٰی اور چیئرمین نیب سابق وزیراعظم نواز شریف کی ضمانت پر رہائی کا فیصلہ کریں۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس محسن کیانی پر مشتمل ڈویژنل بینچ کو ایڈیشنل پراسیکیوٹر جنرل نیب نے بتایا کہ چیئرمین نیب کو ضمانت دینے پر کوئی اعتراض نہیں۔

سنیچر کی صبح مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کی جانب سے فوری سماعت کی درخواست کی گئی جس کے لیے لیگی رہنما عطا تارڑ عدالت پہنچے۔

ادھر لاہور کے سروسز ہسپتال سے نواز شریف کی طبی ٹیم اور شہباز شریف کے قریب سمجھے جانے والے لیگی رہنماؤں نے میڈیا کو یہ خبر ’بریک‘ کرائی کہ سابق وزیراعظم کو گذشتہ رات دل کا دورہ بھی پڑا ہے۔

ہائیکورٹ نے نوازشریف کی بگڑتی ہوئی طبیعت کے پیش نظر آج ہی سماعت کے لیے دائر درخواست سماعت کے لیے مقرر کی۔

درخواست پر سماعت کے لیے دوپہر کا وقت مقرر کیا گیا۔ اسلام آباد ہائی کورٹ کا دو رکنی بینچ سماعت کر رہا ہے۔

گذشتہ روز عدالت نے سماعت منگل تک کے لیے ملتوی کی تھی۔

ڈویژنل بینچ میں چیف جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس محسن اختر کیانی شامل ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ جسٹس عامر فاروق کے چھٹی پر ہونے کے باعث انہیں بینچ میں شامل نہیں کیا گیا۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close