”میڈیا آرمی چیف نہیں وزیراعظم پر توجہ دے“

وزیراعظم عمران خان کے ہمراہ امریکہ میں موجود فوجی ترجمان میجر جنرل آصف غفور نے میڈیا نمائندوں سے کہا ہے کہ واشنگٹن میں وزیراعظم کی ملاقاتوں کی کوریج کی جائے وہی وفد کے سربراہ ہیں۔

پاکستانی سفارتخانے میں ملکی ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے ایک طویل گفتگو میں فوجی ترجمان نے کہا کہ ان کی گفتگو کو رپورٹ نہ کیا جائے کیونکہ وہ چاہتے ہیں امریکی دورے میں ساری توجہ وزیراعظم عمران خان کو ملے۔

ان کا کہنا تھا کہ افواج پاکستان نے پاکستانی سرحدوں کا بہادری سے بھر پور دفاع کیا۔ پاکستان کی داخلی سلامتی صورتحال پہلے سے بہت بہتر ہے۔ عوام اور سیکورٹی اداروں کی کوششیں اور قربانیاں رنگ لا رہی ہیں، اب ساری توجہ بلوچستان پر ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جزل آصف غفور نے واشنگٹن میں پاکستان ایمبیسی میں میڈیا نمائندو ں سے ملاقات میں کہا کہ بیرون ملک پاکستانی میڈیا کا ملک کے مثبت امیج کو اجاگر کرنے میں اہم کردار ہے اس کے لیے مثبت رپورٹنگ کی جائے۔

آصف غفور نے میڈیا کو ملک کی سیکورٹی صورتحال سے متعلق آگاہی دی جبکہ فروری کی پاک بھارت کشیدگی سے متعلق بھی آگاہ کیا۔ انہوں نے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے بارے میں پوچھے گئے سوالوں کا جواب دینے سے گریز کیا۔

انہوں نے کہا کہ افواج پاکستان نے سرحدوں کا بہادری سے بھرپور دفاع کیا۔ میجر جزل آصف غفور نے کہا کہ پاکستان کی داخلی سلامتی صورتحال پہلے سے بہت بہتر ہے۔ عوام اور سیکورٹی اداروں کی کوششیں اور قربانیاں رنگ لا رہی ہیں۔

میجر جزل آصف غفور کا کہناتھا کہ پاک افغان سرحد پر باڑ لگانے سے سرحدی کنٹرول میں بہتری آرہی ہے۔ سرحدی باڑ لگنے سے دہشت گردوں کی مشکلات میں اضافہ، دہشت گردی کے واقعات بتدریج کم ہوں گے جبکہ دہشت گردی سے متاثرہ علاقوں میں سول انتظامیہ کے ساتھ مل کر تعمیروترقی اور بحالی کا کام جاری ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہناتھا کہ اب سیکورٹی فورسز کا بنیادی فوکس بلوچستان کی طرف ہے۔ بلوچستان میں حکومتی ترقیاتی منصوبے فوج کی مدد سے جاری ہیں۔

میجر جزل آصف غفور نے آرمی چیف کی امریکہ میں مصروفیات سے متعلق بھی بتایا۔ ان کا کہنا تھا کہ آرمی چیف وزیراعظم کے ہمراہ وائٹ ہاؤس صدر ٹرمپ سے ملاقات میں موجود ہوں گے۔ آرمی چیف پینٹاگون کا دورہ اور امریکی ملٹری قیادت سے بھی ملاقاتیں کریں گے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close