انڈیا میں چار ”جادوگر“ ہلاک

انڈیا میں جادو کرنے کے الزام میں مشتعل افراد نے دو خواتین سمیت چار افراد کو ڈنڈے مار کر ہلاک کر دیا ہے۔

ہندوستان ٹائمز کے مطابق جارکھنڈ ریاست کے قبائلی علاقے کے ایک گاؤں میں ایک ہی خاندان کے چار افراد کو ہجوم نے ڈنڈوں سے تشدد کر کے ہلاک کیا۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق درجن سے زائد ڈنڈوں سے لیس افراد نے سنیچر کو رات گئے ”جادوگر“ خاندان پر حملہ کیا۔

گملا ضلع کے ڈپٹی کمشنر نے فرانسیسی خبر رساں ادارے کو بتایا کہ واقعے کا تعلق جادو ٹونے سے ہے۔ ان کے مطابق ایک جادوگر نے گاؤں والوں کو بتایا کہ گاؤں میں ہونے والے جادو کے واقعات کا تعلق اس خاندان سے ہے۔

ڈپٹی کمشنر کے مطابق واقعے کے بعداضافی اہلکار متاثرہ گاؤں پہنچ گئے ہیں اور حالات کنٹرول کر لیے ہیں تاہم مارے جانے والے افراد کے رشتہ دار خوف کی وجہ سے تشدد اور قتل کے واقعہ کے بارے میں کچھ نہیں بتا پا رہے۔

ضلع گملہ کے ایک پولیس افسر کا کہنا ہے کہ تاحال کسی کی گرفتاری عمل میں نہیں آئی تاہم واقعے کی تحقیقات جاری ہیں۔

خیال رہے کہ انڈیا میں خواتین کو چڑیل اور ڈائن قرار دے کر گاؤں والوں کی جانب سے مار دینے کے واقعات سامنے آتے رہے ہیں۔

انڈیا کے نیشنل کرائم ریکارڈز بیورو کے اعداد وشمار کے مطابق سنہ 2000 سے 2012  کے بارہ برسوں میں دو ہزار افراد جادو کرنے کے شبہے میں قتل کیے گئے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close