دبئی کی شہزادی لندن بھاگ گئی

متحدہ عرب امارات کی ریاست دبئی کے حکمران شیخ محمد بن راشد المکتوم کی اہلیہ شہزادی حیا نے لندن کی ہائیکورٹ سے رجوع کیا ہے۔

عدالت میں موجود سکائی نیوز سے منسلک صحافی سانیا برجیس کے مطابق انہوں نے سماعت سے یہ نتیجہ اخذ کیا کہ شہزادی حیا اپنی ایک بیٹی کی ممکنہ جبری شادی روکنے کے لیے کوشاں ہیں۔

مبصرین کے مطابق کئی ماہ تک غائب رہنے کے بعد منظر عام پر آنے والی شہزادی حیا کی جانب سے لندن ہائیکورٹ میں مقدمہ برطانیہ اور متحدہ عرب امارات کے درمیان سفارتی تناؤ کا سبب بن سکتا ہے۔

شہزادی کے مقدمے کی سماعت کے موقع پر لندن کی ہائیکورٹ کے باہر انسانی حقوق کی تنظیموں کے نمائندوں نے جبری شادیوں کے خلاف مظاہرہ کیا۔

مظاہرین نے دبئی میں اگلے سال ہونے والے ایکسپو کے بائیکاٹ کرنے والے نعروں کے بینرز اٹھا رکھے تھے۔

شہزادی حیا اردن کے شاہی خاندان میں پیدا ہوئی تھیں۔ اس وقت ان کی عمر 45 برس ہے اور ان کو قدامت پسند عرب بادشاہتوں میں جدیدیت کا استعارہ سمجھا جاتا ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close